درو د ابراہیمی کا پاور فل وظیفہ جو چاہو گے مل جائے گا ہر پریشانی سے نجات مل جائےگی درود ابراہیمی کی حیرت انگیز فضیلت

درود ابراہیمی کا فیض لے کر آپ کی خدمت میں حاضر ہوا ہوں۔

جسے ہم نماز میں پڑھتے ہیں۔ اس کی بہت سی خوبیاں ہیں۔ لیکن اس کے کچھ فضائل بیان کیے گئے ہیں۔ علمائے کرام کا کہنا ہے کہ ایک بار درود ابراہیمی پڑھنے سے خانہ کعبہ کی برکات حاصل ہوتی ہیں۔ جو شخص دو مرتبہ درود ابراہیمی پڑھے تو اللہ تعالیٰ طواف کعبہ کا ثواب دیتا ہے۔ یاد رکھیں کعبہ کا طواف سب سے بڑا ثواب ہے۔ کعبہ کو صرف ایک بار دیکھنے سے ایک سو بیس نیکیاں ملتی ہیں۔ میں آپ کو ایک تجربہ کار اور بہترین عمل بتانے جا رہا ہوں۔ آپ یہ درود ابراہیمی خود بھی پڑھیں اور دوسروں کو بھی پڑھنے کی تلقین کریں۔ کیونکہ یہ ایک جاری صدقہ ہے، اس کا ثواب ملتا ہے۔ اس درود ابراہیمی کے بہت سے فضائل ہیں۔ دنیا کے کسی بھی کونے میں بیٹھا یہ درود ابراہیمی دو مرتبہ پڑھے تو اسے دنیا کے کسی کونے میں بیٹھا خانہ کعبہ کے طواف کا ثواب ملتا ہے۔ اگر ہم ایسا کرتے تو کیا ہوتا؟ جب ہم کسی ضرورت کے لیے یا کسی مسئلے سے چھٹکارا پانے کے لیے ایسا کرتے ہیں۔ یہی نہیں آگ کی مدد سے آپ ویلڈنگ بھی کر سکتے ہیں۔ ضرورت ختم ہو جائے گی۔ بلکہ تمہارے رزق میں اتنی برکت ہوگی کہ تمہاری سات پشتیں بیٹھ کر کھائیں گی۔ اگر آپ درود ابراہیمی کو اپنی زندگی کا معمول بنا لیں۔ تو انشاء اللہ آپ کامیابی کی سیڑھی چڑھیں گے۔ گناہوں سے بچو۔ اللہ آپ کو ہر وہ چیز عطا فرمائے جس کی آپ کو ضرورت ہے۔ حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کا ارشاد ہے: جو شخص مجھ پر ایک مرتبہ درود پاک پڑھے اللہ تعالیٰ اس کے لیے دس نیکیاں عطا فرمائے گا۔ اس پر دس رحمتیں نازل ہوتی ہیں۔ اور اس کے دس گناہ معاف کر دیتا ہے۔ ہمیں کثرت سے درود ابراہیمی کا ورد کرنا چاہیے۔ دن میں کم از کم چھ بار درود ابراہیمی تین سو تین مرتبہ پڑھیں۔ درود ابراہیمی پڑھنا ضروری نہیں۔ آپ کوئی بھی درود پاک پڑھ سکتے ہیں۔ یہ درود ابراہیمی کا فریضہ ہے۔ گیارہ دن کا فرض ہے۔ آپ اسے آسانی سے کر سکتے ہیں۔ آپ اسے کسی بھی وقت کر سکتے ہیں۔ وقت کی کوئی پابندی نہیں ہے۔ پاکیزگی کی کوئی پابندی نہیں۔ خواتین اپنے دنوں میں ایسا ہی کر سکتی ہیں۔ یہ عمل بہت آسان ہے۔ اس عمل میں ایک سو ایک مرتبہ درود ابراہیمی پڑھنا ہے۔ ضرورت صرف پریشانی سے نجات کی ہے۔ اللہ سے دعا کریں۔ ان شاء اللہ ! اللہ کے حکم سے مکمل ہو گا۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.