جسم سے پھنسیاں، دھبے،مسے ،کالے تل اور دوسرے نشانات مٹانے کے آزمودہ قدرتی طریقے

اس تحریر میں جسم سے پھنسیاں دھبے،بڑھاپے کی جھریاں کالے تل،مسے اور دوسے نشانات مٹانے کے آزمودہ قدرتی نسخے پیش کئے جارہے ہیں ۔زندگی کے مختلف مراحل میں جسم پر مختلف قسم کے داغ دھبے اور نشانات وارد ہوتے رہتے ہیں،جو ہارمونز کی تبدیلی اور لائف سٹائل بدلنے سے واقع ہوتے ہیں۔ان مسائل سے نجات کے لئے بہت سے سکن اور بیوٹی کیئر پروڈکٹس مارکیٹ میں دستیاب ہیں جن سے آپ اپنی سکن کو صاف اور چمکدار بناسکتےہیں ۔لیکن ان میں سے بہت سی کم چیزیں فائدہ مند ثابت ہوسکتی ہیں۔

اس لئے نقصاد دہ کیمیکل اور قدرتی پراڈکٹس کے استعمال سے بچنے کے لئے آپ کچھ ساد ہ اور آسان طریقے اپنا کر بھی بہتر نتائج حاصل کر سکتے ہیں ۔یہ طریقے آپ کی سکن کو خوبصورت بنانے اور آپ کو سکن پرابلم سے نجات دلانے میں نہایت مؤثر ثابت ہو سکتے ہیں۔صحت مند اور صاف جلد کے لئے آپ مندرجہ ذیل قدرتی طریقے اختیار کر کے عام جلدی بیماریوں سے نجات پائیں۔تِل،چھچھوندر:تِل یا چھچھوندر زندگی کے کسی بھی حصے میں بچے اور بڑے کی جلد کو متاثر کر سکتے ہیں۔یہ دھوپ اور جینیٹکس کی بدولت جسم پر ظاہر ہوتے ہیں۔کیسٹرآئل اور بیکنگ سوڈا:ان تلوں سے نجات کے لئے آپ کیسٹراآئل اور بیکنگ سوڈا کا استعمال کرسکتے ہیں۔ان دونوں چیزوں کا ایک مکسچر تیار کریں اور اسے متاثرہ حصے پر لگائیں۔لگانے کے بعد پٹی باندھ دیں اور ایک رات تک اسی حالت میں رکھیں۔

اگلے دن پٹی اتار کر جگہ کو صحیح صاف کرلیں۔یہ سلسلہ روزانہ اختیار کریں۔لہسن کا استعمال:لہسن کا پیسٹ یا سادہ لہسن بھی مولز سے نجات کے لئے بہت مفید ثابت ہوسکتا ہے ۔لہسن لگانے سے پہلے ٹیب یا پیٹرولیم جیلی سے مول کے اردگرد کے حصہ کو ڈھانپ لیں۔پھر لہسن کو متاثرہ جگہ پر لگا کر اوپر پٹی باندھ دیں اور چار گھنٹہ انتظار کریں ۔یہ عمل روزانہ دہرائیں۔سیب کے جوس کا سرکہ : سیب کا سرکہ بہت مفید ہے ۔آپ سرکہ کو کاٹن بال پر لگا کر مول پر لگائیں۔بعد میں پٹی یا تیپ سے ایریا کو ڈھانپ دیں اور آٹھ گھنٹے تک ایسے ہی رہنے دیں۔جلد ہی پھوڑا کالا ہونے کے بعد ختم ہوجائے گا۔مسا،مسے کیا ہوتے ہیں؟مسے ایک جلدی بیماری اور میڈیکل ی زبان میں اسے ایکروکورڈز کہتے ہیں۔اکثر جلد پر کالے رنگ کے چھوٹے بدنما اُبھار پیدا ہوجاتے ہیں اسے مسے کہتے ہیں۔یہ مریض بچوں اور بڑوں دونوں کو لاحق ہوسکتا ہے۔مسے پھیل بھی جاتے ہیں اور چہرے اور جسم کی خوبصورتی کو تباہ کرنے میں اہم کردار ادا کرتے ہیں۔

عموما مسے تعداد میں زیادہ ہوتے ہیں اور جسم کے مختلف حصوں پر نمودار ہوتے ہیں۔ لیکن یہ کسی ایک مقام پر ہجوم کی صورت میں بھی ظاہر ہوسکتے ہیں اور بعض اوقات اچانک یہ خود بخود غائب بھی ہوجاتے ہیں۔مسوں کا علاج:سیب کے سرکے کا استعمال: سیب کے سرکہ کو مسوں کے خاتمے کا بہترین طریقہ بتایا گیا ہے ۔اس کے لئے آپ روئی کاٹکڑا سیب کے سرکے میں ڈبو کر مسوں پر لگائیں اور تین سے چار گھنٹوں کے لئے اسے چھوڑ دیں پھر اسے اچھی طرح دھولیں۔اس عمل کو دن میں تین دفعہ اور تین سے چار ہفتوں تک کریں۔مسوں کا لہسن سے علاج:لہسن کے چند ٹکڑے پِیس لیں پھر پسے ہوئے لہسن کو مسوں پر لگا کر پٹی باندھ دیں اور ایک دن بعد پٹی کھولیں اور نیم گرم پانی سے دھو لیں اس عمل کو کچھ دنوں تک کریں۔

چائے کے درخت کا تیل:چائے کی پتی کے درخت کا تیل بھی مسوں کے لئے ایک آزمودہ ٹوٹکہ ہے۔سب سے پہلے روئی کو پانی میں ڈبو کر نچوڑ لیں پھر اس پر تین سے چار تیل کے قطرے ڈال کر مسوں پر لگائیں اور کچھ گھنٹوں کے لئے اسے چھوڑ دیں اس عمل کو دن میں تین سے چار دفعہ اور دوسے چار ہفتوں تک کریں۔انجیر کا استعمال:تازہ انجیر کا دودھیا جوس بھی مسوں کے خاتمے کا بہترین علاج ہے۔تازہ انجیر کا جوس دن میں سات سے آٹھ مرتبہ مسوں پر لگائیں اور یہ عمل دو ہفتوں تک جاری رکھیں۔پیاز کا استعمال:پیاز کو بھی مسوں سے چھٹکارا پانے کے لئے استعمال کیاج جاتا ہے۔پیاز سکن پر خراش پیداکرتی ہے اور خون کی گردش کو برقرار رکھتی ہے۔پیاز کو کاٹ کر مسوں پر رگڑنے سے عموما مسے ختم ہوجاتے ہیں۔کاجو کا تیل:کاجو کے چھلکے سے نکلنے والا تیل بھی مسوں کو تحلیل کرنے میں بھر پور اثر رکھتا ہے کیوں کہ یہ جلد پر خراش پیداکرتا ہے اسے مسوں پر لگاتے رہنے سے یہ بتدریج تحلیل ہوجاتے ہیں۔خالص شہد کا استعمال:مسوں کا علاج کالص شہد سے کیاجاسکتا ہے۔بہت آسان طریقہ کار ہے ۔

شہد کو رات کے وقت مسوں پر ملیں اور اوپر پٹی کر دیں۔کبھی کبھار یہ اتنا مفید ہوتا ہے کہ دوبارہ مسے جسم کے اس حصے کے قریب بھی نہیں بھٹکتے۔کیلے کا استعمال:کیلا مسوں سے نجات کا سب سے آسان حل ہے ۔روزانہ کیلے کا چھلکا مسے پر مل لیں۔دو ہفتہ تک یہ عمل دہرائیں۔مسامکمل طور پر غائب ہوجائے گا۔سکن ٹیگ:یہ جلد پر نمودار ہونے والے نشان ہیں جو اکثر گردن کے آس پاس،سینہ پر اور آنکھوں کے نیچے ظاہر ہوتے ہیں۔زیادہ تر یہ جلد کی جلد سے رگڑ کے نتیجہ میں پیدا ہوتے ہیں ان کے علاج کے لئے انہیں کاٹا یا برف کے ذریعے پگھلایا جاتا ہے۔البتہ نیچے دیئے گئے قدرتی طریقے مزید بہتر طریقے سے ان نشانات سے نجات دلا سکتے ہیں۔چائے کے پودے کا آئل:تھوڑا ساپانی لیں اور اس میں چائے کے پودے کا آئل شامل کریں ۔

کاٹن بال کو جلد پر رگڑیں اور اوپر پٹی باندھ دیں۔یہ عمل روزانہ دو یا تین بار ایک ماہ تک جاری رکھیں۔اگرچہ اس میں وقت لگتا ہے لیکن یہ سب سے محفوظ طریقہ ہے۔سیب کے جو س کا سرکہ:سرکہ کو کاٹن بال پر لگا کر جلد پر لگائیں اور جب تک چاہیں لگائے رکھیں۔کچھ ہی دنوں میں نشان کالا ہونے کے بعد ختم ہوجائے گا۔کیستر آئل اور بیکنگ سوڈا:سکن ٹیگ سے نجات کے لئے آپ کیستر آئل اور بیکنگ سوڈاکا استعمال کرسکتےہیں۔ان دونوں چیزوں کا ایک مکسچر تیار کریں اور اسے متاثرہ حصے پر لگائیں اور لگانے کے بعد پٹی باندھ دیں۔یہ مکسچر فریج میں 48 گھنٹے تک محفوظ رکھا جاسکتا ہے اور ایک رات تک اسی حالت میں رکھیں ۔یہ سلسلہ روزانہ دو یاتین بار تک اختیار کریں۔ڈارک سپاٹ:ایج سپاٹ یا ڈارک سپاٹ بے رنگ کے دھبوں کو کہاجاتا ہے جو چہرے،ہاتھوں اور بازوؤں کے اگلے حصے پر نمودار ہوتے ہیں اگرچہ ان کے ظاہر ہونے کی وجہ ابھی تک واضح نہیں ہے،زیادہ تر ڈاکٹر ز کے خیال میں یہ دھوپ اور بڑھتے ہوئے لِور کی وجہ سے ظاہر ہوتے ہیں ۔

ان سے نجات کے لئے بہتری طریقے ملاحظہ فرمائیں۔ایلوویرا: ایلویرا ڈارک سپاٹ کا سب سے زیادہ مؤثر حل ہے۔تازہ ایلو ویرا لے کر اسے سیاہ دھبے پر لگائیں اور تیس منٹ تک لگا رہنے دیں۔ایلو ویرا کے پودے کا اندرونی جیل بھی استعمال کریں۔لیموں:لیموں سیاہ دھبوں سے نجات کا اہم نسخہ ہے۔ ایک قدرتی بلیچر کا کام دیتا ہے۔کاٹن بال کو لیمن جوس میں ڈِپ کر کے اسے سیاہ دھبوں پر دن میں دو بار لگائیں اور اس کا اثر دیکھیں۔ ہارس ریڈش:ڈارک سپاٹس کو مٹانے میں ہارس ریڈش بھی اہم کردار کی حامل ہے ۔ہارس ریڈش کو سرکہ میں ملا کر دھبوں پر لگائیں یہ عمل تب تک جاری رکھیں جب تک دھبے غائب نہیں ہوجاتے۔پیا:اس کیس میں پیاز کا استعمال بھی بہت اہم ثابت ہوتا ہے۔پیاز کا جوس نکال کر دھبوں پر لگائیں اور 15منٹ تک انتظار کریں پھر صاف کردیں۔یہ عمل بھی دھبوں کے مکمل خاتمے تک جاری رکھیں۔وٹامن سی سیرم:وٹامن سی سیرم سکن کے لئے بہت مفید ثابت ہوسکتے ہیں ۔ان کے اندر ایکٹو وٹامن سی موجود ہوتا ہے جو سیاہ دھبوں کو ختم کرنے کی بھر پور طاقت رکھتا ہے ۔یہ زخمی جلد کو ٹھیک کرنے کی صلاحیت بھی رکھتا ہے۔شکریہ

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published.